وہ اکثر مجھ سے کہتا تھا شور بہت تم کرتی ہو

January 19, 2021
Love
0 0

وہ اکثر مجھ سے کہتا تھا شور بہت تم کرتی ہو

میں ہنس کر اس سے کہتی تھی جب کلائی میری تم پکڑو گے چوڑی میری کھنکے گی چوڑی کا شور تو ہوتا ہے.

وہ اکثر مجھ سے کہتا تھا شور بہت تم کرتی ہو

میں ہنس کر اس سے کہتی تھی جب پیار سے مجھے تم بلاؤ گے دوڑ کے جب میں آؤ گی پائل میری کھنکے گی پائل کا شور تو ہوتا ہے.

وہ اکثر مجھ سے کہتا تھا شور بہت تم کرتی ہو

میں ہنس کر اس سے کہتی تھی جب زلف میری سلجھاؤ گے گجرے کو مہکاؤ گے جب سانسیں میری مہکے گی سانسوں کا شور تو ہوتا ہے

وہ اکثر مجھ سے کہتا تھا شور بہت تم کرتی ہو

میں ہنس کر اس سے کہتی تھی جب بندیا میری ماتھے پر چمکے گی تیری آنکھ میں دمکے گی جب جذبے شور مچائے گے جذبو کا شور تو ہوتا ہے

پھر کیوں مجھ سے یہ کہتے ہو کے شور بہت تم کرتی ہو.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *