رسمِ محبت زرا سرکار نبھا کر سونا

January 19, 2021
Love
0 0

رسمِ محبت زرا سرکار نبھا کر سونا
میری تصویر کو سینے سے لگا کر سونا

مرمری باہیں کہیں دکھ نہ جائیں کروٹ لینے میں
ریشمی بستر پہ پھولوں کو بچھا کر سونا

میرا دعوا ہے کہ پروانے تمہیں ڈھونڈیںگے
امتحاں چاہو تو پھر شمع بجھا کر سونا

لگ نہ جائے کہیں بےتاب ستاروں کی نظر تمہیں
چاند سے چہرے کو ذرا آنچل سے چھپا کر سونا

چوم لینے دو ہمیں نرگسی آنکھیں اپنی
پھر بڑے شوق سے پلکوں کو جھکا کر سونا

صبح ہوتے ہی تیرے شہر سے جانا ہے مجھے
آج کی رات ذرا مجھ کو منا کر سونا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *