جہان

March 15, 2021
motivation
0 0

کیوں نا ایسا جہان بسایا جائے
ظالم کو جہاں دار پہ لایا جائے

لالہ و گل کا نہ بہے خون جدھر
چمن سے تتلی کو نہ اڑایا جائے

دشمنیاں بھلا کر ہر طرح کی
دوستی کے لیے ہاتھ بڑھایا جائے

اصول ہو کہ کرو عہد اگر کوئی
تو پھر اس کو تا عمر نبھایا جائے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *