آپ آتے تو بات بنتی بھی

January 28, 2021
complaint
0 0

آپ آتے تو بات بنتی بھی
آپ رکتے تو حال کہتے ناں

آپ ملتے تھے جی رہے تھے ہم
ملتے رہتے تو زندہ رہتے ناں

آپ کا ہجر سہہ لیا ہم نے
یہ قیامت جو آپ سہتے ناں

آپ کی گود میں جو سر ہوتا
پھر مرے اشک بھی تو بہتے ناں

میرے پہلو میں چین ملتا تھا
میرے پہلو میں آپ رہتے ناں

آپ کہتے کہ لوٹ آؤں گا
آپ اک بار تو یہ کہتے ناں

علم ہوتا کہ آپ گزریں گے
ہم تو رستے میں بیٹھے رہتے ناں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *