آو کسی شب مجھے ٹوٹ کے بکھرتا دیکھو

January 28, 2021
broken
0 0

آو کسی شب مجھے ٹوٹ کے بکھرتا دیکھو
میری رگوں میں زہر جدائی کا اترتا دیکھو

کس کس ادا سے مانگا ہے رب سے
آو کسی شب مجھے سجدے مہ سسکتا دیکھو

تیری تلاش میں ہم نے خود کو کہ دیا ہے
مت آو سامنے مگر کہیں مجھے تڑپتا دیکھو

بڑے شوق سے مر جائیں گے ہم آگر
تم سامنے بیٹھ کر سانسوں کا تسلسل ٹوٹتا دیکھو

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *